اسلام آباد،03ستمبر(اے پی پی ):وزیر اعظم پاکستان نے صوبہ سندھ میں دریائے سندھ پر سمندر سے 45کلومیٹر بالائی جانب سندھ بیراج /ویئر تعمیر کرنے کی منظوری دے دی جس سے  پانی کا ایک  بڑا   ذخیرہ وجود میں آئے گا ۔ مذکورہ بیراج /ویئر تعمیر کرنے کی منظوری صوبہ سندھ میں آبی وسائل کے فروغ کی جانب ایک تاریخی پیش رفت ہے کیونکہ اس منصوبے کی تعمیر سے کوٹری بیراج کے زیریں علاقوں میں پانی کے مسائل حل کرنے اور کراچی کو پینے کے پانی کی اضافی فراہمی میں مدد ملے گی۔

 سندھ بیراج کی تعمیر صوبہ سندھ خصوصاًکوٹری بیراج کے زیریں علاقوں میں معاشرتی اور معاشی ترقی میں اہم کردار اداکرے گی۔ اس بیراج کی تعمیر کی بدولت دریائے سندھ کے ڈیلٹا میں سمندری پانی کو چڑھنے سے روکنے ،زرخیز اراضی سمندر بُرد ہونے سے بچانے ، ماحولیاتی اثرات پر قابو پانے ، مینگرووز جنگلات اور آبی حیات کی افزائش ،آبپاشی اور آب نوشی کے لئے میٹھے پانی کی فراہمی کے ساتھ ساتھ آبادی کی بڑے پیمانے پر نقل مکانی کو روکنے میں مدد ملے گی۔

سندھ بیراج کی تعمیر سے صوبہ میں ڈاؤن سٹریم کوٹری پانی کے مسائل حل کرنے اور کراچی میں پانی کی قِلّت پر قابو پانے میں مدد ملے گی اور سندھ بیراج منصوبہ دریائے سندھ پر سمندر سے 45کلومیٹر بالائی جانب تعمیر کیا جائے گا جو  دسمبر 2024ء تک مکمل ہوگا۔

سندھ بیراج ٹھٹھہ سے 65کلومیٹر جنوب جبکہ کراچی سے 130کلومیٹر مشرق میں تعمیر کیا جائے گا۔

وی این ایس ، اسلام آباد