اسلام آباد، 02  اپریل   (اے پی پی ): کورونا وائرس  سے بچاو کے لیے کیےجانے والے  حفاظتی اقدامات نے  صر ف  پاکستان ہی نہیں  بلکہ دنیا بھر میں معاشی سرگرمیوں کو بری طرح متاثر کیا ہے  ،  بہت سے  دیہاڑی دار افراد اور مزدور     گھروں میں محصور ہو نے یا  نوکریوں  کی بندش کے باعث دو وقت کی روٹی  کمانے سے قاصر ہیں  اور  خط غربت سے نیچے زندگی گزارنےپر مجبور  ہو گئے  ہیں۔اس صورتحال کے پیش نظر ان افراد کی مشکلات کے ازالے اور انہیں مدد فراہم کرنے کی غرض  سے  حکومت پاکستان کی جانب سے  144  ارب روپے کے بجٹ کےساتھ   احساس ایمرجنسی کیش پروگرام  کا     آغاز  کیا   گیا ہے    جس کےتحت  ایک کروڑ 20 لاکھ خاندانوں کو12000 روپے فی خاندان فراہم  کیا  جائے گا۔
پروگرام کے تحت  مستحق افراد کی نشاندہی کا آغازا یس ایم ا یس مہم کے ذریعے کیا جائے گا جس کے بعد مستحقین کواحساس کے موجودہ ڈیجیٹل ادائیگیوں کے نظام کے تحت فوری اور آسان طر یقے سے امدادی رقم منتقل کی جا سکے۔شہری  8171 پر ایس ایم ایس بھیج کر پروگرام میں شامل ہونے کیلئے اپنی اہلیت کو جانچ سکیں جس کے بعد  اہل افراد کو بذریعہ ایس ایم ایس رقم وصول کرنے کی اطلاع کر د ی جائے گی ۔
جن افراد کے کوائف کی تصدیق قومی سماجی ومعاشی سروے کے اعداد و شمار سےنہ ہو سکے گی ان کو ضلعی انتظامیہ سے رابطہ کرنا ہو گا۔ مستحقین کی اہلیت
کے  معیار کے مطابق   درجہ اول  میں  کفالت پروگرام کے 45 لاکھ موجودہ صارفین کو ماہانہ 2000روپے وظیفے کے ساتھ ساتھ اگلے چار ماہ کےلئے1,000روپے کی اضافی رقم دی جائے گی، اس طرح ان کو چار ماہ کی رقم 12,000 روپےیکمشت ادا کر دی جائے گی  جبکہ درجہ دوئم میں 75 لاکھ د یگر مستحقین کو12,000 روپے یکمشت ادا کئے جائیں گے۔
مستحقین کی نشاندہی کے  عمل میں نادرا کی مدد سے اعداد و شمار اور کوائف کا تفصیلی جائزہ لیا جائے گا تاکہ شفافیت کو یقینی بنایا جاسکے اور کوئی غیر مستحق شخص پروگرام سے مستفید نہ ہو سکے۔

اے پی پی/  سعیدہ/حامد