اسلام آباد، 4 نومبر ( اے پی پی): دنیا کا دوسرا خوبصورت ترین دارالحکومت اسلام آباد دھرنے اور آزادی مارچ کی بدولت گندی اور بیماریوں کا ڈھیر بننے لگا۔

دھرنے کے شرکاء نے کشمیر ہائی کے عقب میں موجود گرؤانڈ پر خیمہ بستیاں قائم کرلیں۔یہاں بیٹھے افراد کے لئے دھرنا انتظامیہ کی جانب سے بیت الخلاء کو کوئی بھی مناسب بدوبست نہیں ، لوگ کھلی فضا میں رفح حاجت کرنے پر مجبور ہیں جو کہ نا صرف یہاں آئے افراد  کے لئے  گندگی، تعفن، اور دیگر بیماروں کا باعث بن رہا ہے بلکہ اسلام آباد کے رہائشی بھی اس گندگی کے وجہ سے شدید پریشان ہیں۔

یہاں پر شرکاء نے اپنا گزر بسر اور کھانا پکانے کے گیس سلنڈر کا استعمال کرر ہے ہیں جو کہ کسی بھی طرح سے محفوظ نہیں بلکہ انتہائی جان لیوا ثابت ہوسکتے ہیں۔

دھرنے کے شرکاء سہولیات فراہم کرتے ہوئے روزمرہ  استعمال کے لیے پانی کی بلا تعطل فراہم کی جا ری ہے، لیکن غیر مناسب طریقہ استعمال اور جگہ جگہ پانی کھڑا ہوجانے سے  ڈینگی اور دیگر بیماروں جنم لے سکتی ہیں۔

احتجاج کرنا ہر شہری کا حق ہے لیکن ایسا کرتے ہوئے قومی املاک، نظم و نسب، اور صفائی ستھرائی کو خاص طور پر ملحوض خاطر رکھنا چاہیے۔

وی این ایس، اسلام آباد

Video Download