لاہور،4 دسمبر(اے پی پی):چیئرمین ایڈایشیاء کانفرنس 2019ء سرمد علی نے کہا ہے کہ ایڈ ایشیاء کانفرنس میں شرکت کرنیوالے قومی اور بین الاقوامی مقررین کمیونیکیشن کے میدان میں انتہائی تجربہ کار وقابل افراد تسلیم کئے جاتے ہیں، پاکستان سرمایہ کاری کیلئے دنیا کا بہترین ملک ہے، ایڈایشیاء کا لاہور میں کامیاب انعقاد پاکستان کی کامیابی ہے،اس طرح کے پروگرام سے پاکستان میں معیشت کی نئی راہیں کھلیں گی۔

 لاہور میں  منعقدہ 31ویں  ایڈ ایشیاء  میلہ  کے  دوسرے  روزاے پی پی  سے خصوصی  گفتگو میںچیئرمین ایڈ ایشیاء کانفرنس نے کہا کہ ایڈ ایشیاء کانفرنس میں شرکت کرنیوالے غیر ملکی مندوبین میں سے  رچرڈ کوئسٹ، سر مارٹن سورل پہلی دفعہ پاکستان آئے ہیں اور پاکستان آکران کی سوچ بھی تبدیل ہوئی ہے اور انہوں نے کہاکہ پاکستان ایک مہمان نوازاور پرامن شاندارمتحرک ملک ہے۔

سرمد علی  نے کہا کہ پاکستان کے دو رخ ہیں، ایک وہ جومغربی میڈیا دنیا کو دکھاتا ہے اوردوسرا وہ جو مغرب سے مندوبین پاکستان آتے ہیں اور یہاں ان کو  تجربہ حاصل ہوتا ہے اور انہیں پتہ چلتا ہے کہ پاکستان ایک ذمہ دار ملک ہے، ضرورت اس امر کی ہے کہ دنیا بھر میں صرف پاکستان کی بات کی جائے کیونکہ پاکستان بھی ایک برانڈ ہے، جب تک ہم پاکستان کی تشہیر نہیں کرینگے تب تک ہمیں حوصلہ افزاء نتائج نہیں ملیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ایڈ ایشیاء کانفرنس سے پاکستان کامثبت امیج ابھرے گا،ایڈ ایشیاء ایک ایساموقع ہے جو ایشیاء کے لوگوں کو ایک دوسرے کے خیالات جاننے کاموقع فراہم کرتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ایڈ ایشیاء ہر دوسال بعد ایشیاء میں منعقد ہو رہی ہے،تیس سال قبل 1989ء میں پاکستان میں کامیاب کانفرنس منعقد ہوئی تھی جس میں ملکی و بین الاقوامی سینکڑوں ایڈورٹائزنگ ایجنسیوں کے کمیونیکیشن ایکسپرٹ نے شرکت کی تھی۔

سورس: وی  این ایس،  لاہور