لاہور، 4 دسمبر (اے پی پی): ممبر ایڈوائزری بورڈ بریگیڈیئر ریٹائرڈ منصور سعید شیخ نے کہا ہے کہ ایڈ ایشیا کانفرنس بنیادی طور پر مارکیٹنگ اور ایڈورٹائزنگ کے لیے ہے۔ جو کہ ہر سال ممبر ممالک میں منعقد کی جاتی ہے اس دفعہ یہ پاکستان میں منعقد کی جا رہی ہے۔ ایڈ ایشیا کانفرنس کے آنے سے پاکستان کا مثبت چہرہ دنیا بھر میں اجاگر ہوا ہے۔

لاہور میں  منعقدہ 31ویں  ایڈ ایشیاء  میلہ  کے موقع  پر اے پی پی  سے خصوصی  گفتگو میں  انہوں نے کہا کہ  اس سے قبل یہ  تیس سال پہلے لاہور میں منعقد کی گئی تھی ،اس سے پہلے یہ کانفرنس 30 سال تک پاکستان میں سکیورٹی وجوہات کی بنا پر نہیں منعقد کی جا سکی تھی پر اب پاکستان میں سیکیورٹی کے مسائل حل ہونے کی بناء پر یہ واپس آئی  ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیکیورٹی مسائل حل ہونے کی وجہ سے ہی آپ نے دیکھا کہ سری لنکا کی کرکٹ ٹیم اور ساری دنیا نے پاکستان کی طرف رخ کر لیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کانفرنس میں آسٹریلیا ،امریکہ اور یورپ میں سے بہت سے ممالک ایسے ہیں جن کے مندوبین کو میں نے پہلی دفعہ پاکستان آتے دیکھا ہے کیونکہ انہوں نے جن خدشات کی وجہ سے پاکستان کا رخ نہیں کیا تھا ان کو اپنی آنکھوں سے دیکھ کر تسلی ہوگئی ہے کہ پاکستان ایک پرامن ملک ہے۔

سورس: وی  این ایس،  لاہور