لاہور، 3 ستمبر (اے پی پی): ایکسپو سنٹر لاہور میں ساتویں سالانہ پاک چائنہ انڈسٹریل ایکسپو کا انعقاد کیا گیا جس میں چین اور پاکستان کے انڈسٹریل مینو فیکچررز کی کثیر تعداد نے شرکت کی اور کہا کہ اس طرح کے ایکسپو ہوتے رہنے چاہیے تاکہ پاکستان چین کی ٹیکنالوجی سے فائدہ اٹھا کر ترقی کی راہ پر گامزن ہو سکے۔

اس موقع پر وزیر توانائی پنجاب اختر ملک نے اے پی پی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ دنیا گلوبل ویلیج کی صورت اختیار کر چکی ہے اس طرح کے ایکسپو سے پاکستان تاجروں کو چین کی ٹیکنالوجی کو سمجھنے میں مدد ملے گی۔

انہوں نے کہا کہ سی پیک کی صورت میں چین کی پاکستان میں بڑی انوسٹمنٹ ہے، چین اور پاکستان کی اکانومی 4 عشرے پہلے برابر تھی، چین 4 عشروں میں ترقی کر گیا ہم آج بھی وہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کو اب اس وزیراعظم کا ساتھ  دینا چاہیے جو پاکستان کی ترقی کے لیے کوششیں کر رہا ہے اور پاکستان کو جلد اپنے پاوں پر کھڑا کر دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ 17 سالوں میں پہلا رمضان ہے جو بغیر کسی لوڈشیڈنگ کے گزرا ہماری حکومت نے آتے ہی بجلی چوری روکی جس کے اثرات اب لوگوں دیکھ رہے ہیں۔ انہوں نے مزید  کہا کہ لوڈشیڈنگ اب صرف ان علاقوں میں ہے جہاں بجلی چوری ہو رہے ہے۔

اے پی پی /لاہور/حامد