اسلام آباد ، 04 فروری  (اے پی پی ): پاکستان کے سابقہ سفیر  اور  صدر   انسٹیٹیوٹ آف پالیسی ریسرچ    وائس ایڈمرل (ر) خان ہشام بن صدیق  نے کہا ہے  کہ  بھارت کے جارحانہ رویے   کے  باعث   پورے خطے   کا امن اور معیشت   متاثر ہو رہے ہیں   اس لیے عالمی برادری   کو اس مسئلے کے حل کے لیے    مزید   موثر کردار ادا کرنا   ہو گا   کیونکہ  خطے میں   امن اور خوشحالی  مسئلہ کشمیر کے کشمیریوں کی امنگوں کے مطابق حل کے بغیر ناممکن ہے  ۔

یوم   یکجہتی   کشمیر کے حوالے سے   اے پی پی    سے خصوصی گفتگو  کرتے ہوئے ہشام بن صدیق   کا کہنا تھا   کہ وزیراعظم مودی نے ہندوستانی  آئین سے آرٹیکل  370 کو منسوخ کر کے یکطرفہ طور پر وادی کے مستقبل کافیصلہ  کرنے کی کوشش کی ہے۔  ہندوستان کو اب تک معلوم ہوجانا چاہے کہ کشمیر ی الحاق کے بارے  میں  اپنا  فیصلہ  دے چکے  ہیں   اور وہ ہندوستان سے اپنی آزادی پر کوئی سمجھوتہ  نہیں  کریں گے۔

انہوں نے کہا  کہ کشمیری اپنے  جائز حق خودارادیت کے حصول کے لیے  دہائیوں سے  قربانیاں  دے رہے ہیں  ،ہندوستانی    ہتھکنڈے اس جدوجہد کو کسی طرح دبانے میں   کامیاب نہیں ہو سکتے  اور مسئلہ کشمیر کا واحد حل کشمیریوں کو حق خوداریت  دینے  میں ہی   ہے۔

اے پی پی /  سعیدہ/ریحانہ