اسلام آباد ، 11 جون (اے پی پی ):  وفاقی وزیر برائے غذائی تحفظ خوراک و تحقیق سید فخر امام  نے کہا ہے کہ اس سال چاول کی ریکارڈ 84  لاکھ   ٹن   پیداوار ہوئی ہے جبکہ روس نے آج سے پاکستانی چاول درآمد کرنے پر عائد پابندی ختم کر دی ہے، جس سے ہمیں اپنا زر مبادلہ  بڑھانے کا موقع   مل گیا ہے۔

 پریس کانفرنس سے خطاب میں وفاقی وزیر  کا کہنا تھا کہ روسی حکومت نے آج سے دو سال پہلے پاکستانی چاول درآمد کرنے پر پابندی عائد کی تھی، جسے ختم کر دیا گیا ہے۔

وفاقی وزیر  سید فخر امام نے کہا کہ رواں سال گندم ، چاول اور مکئی کی ریکارڈ پیداوار دیکھنے میں آئی ہے، گندم کی فصل کی پیداوار میں 27.3 ملین ٹن کا اضافہ کیا گیا ہے ، جو پچھلے سال کے مقابلے میں 20 لاکھ ٹن زیادہ ہے۔انہوں  نے کہا کہ یہ حکومت کے مختلف اقدامات کی وجہ سے ہوا ہے۔

سید فخر امام نے کہا کہ گندم کی ریکارڈ پیداوار حاصل کرنے میں مصدقہ بیج استعمال کیے گئے تھے،  گندم کی پیداوار میں بہتری سے کسانوں ، عام آدمی اور ملک کو بھی فائدہ ہوگا۔انہوں نے بتایا کہ چاول کی پیداوار 8.41 ملین ٹن رہی جبکہ چاول کی برآمد میں گیارہ فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔

سید فخر امام نے کہا کہ حکومت کی طرف سے کسان دوست اقدامات کے سبب آم ، کھٹی اور آلو کی برآمد میں بھی اضافہ دیکھا گیا ہے۔