اسلام آباد۔24مئی  (اے پی پی):وزیر مملکت اطلاعات و نشریات فرخ حبیب نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں پی ٹی آئی حکومت معاشی میدان سمیت ہر شعبے میں کامیابی کی منازل تیزی سے طے کررہی ہے، عمران خان حکومت اپنی پانچ سالہ آئینی مدت مکمل کرے گی،زراعت کی ترقی سے کسان خوشحالی اور ملکی معیشت بہتر ہو گی،بلند ترین سٹاک ایکسچینچ  اور زرمبالہ حکومت پالیسیوں کا ثمر ہے۔

 وہ پیر کو نیشل پریس کلب میں میٹ دی پریس پروگرام سے خطاب کر رہے تھے ۔ صدر نیشنل پریس کلب شکیل انجم اور سیکرٹری جنرل انور رضا بھی اس موقع پر موجود تھے ۔ وزیر مملکت  نے کہا کہ حکومت غذائی تحفظ کی جانب جارہی ہے ،   قومی زراعی پالیسی کی طرف جارہے ہیں اس میں تمام اجناس شامل ہوں گی، ماضی میں زراعت،بیچ پر انوسمنٹ نہیں کی گئی، ہم اس پر کام کررہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کامیاب جواب پروگرام کے تحت زمین گروی رکھے بغیر ٹریکٹر کے لئے کم شرح سود پر آسان قرض دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب میں ذخیرہ اندوزی کے حوالے سے آرڈیننس کا اجراء ہوا تا کہ سخت کارروائی اور کوئی مہنگائی نہ کرسکے۔

وزیر مملکت نے کہا کہ ملکی برآمدات میں 13.5 فیصد اضافہ ہوا،بڑے پیمانے کی صنعتیں 9 فیصد کی شرح سے ترقی کررہی ہیں، زرمبادلہ کے مجموعی ذخائر 23 ارب ڈالر کی سطح پر پہنچ چکے ہیں، چاول کی پیداوار میں 13،مکئی 7فیصد جبکہ گندم کی پیداوار میں 8.1فیصد اضافہ ہوا۔ انہوں نے کہا کہ ن لیگ کے اسحاق ڈار معیشت میں بارودی سرنگیں بچھا کر گئے،15دنوں کے فارن ریزو چھوڑ کر گئے،ایکسپورٹ کم ہورہیں تھیں،تجارتی خسارہ 40بلین تھے، ترسیلات زر رک گئیں تھیں۔

وزیر مملکت فرخ حبیب نے کہا کہ ہماری حکومت اصلاحات لیکر آئی، شماریات بیورو بنایا،مارکیٹ سے قیمتیں اقوام متحدہ کے طریقہ کار کے مطابق سامنے لائی جارہی ہیں،  عوام کے لئے یہ خوشخبری ہے کہ مالی سال مکمل ہونے تک پاکستان میں 55بلین ڈالر کا انفلو ہوگا،اگر کسی کو اعتراض ہے تو سامنے آئے انھیں ہرلحاظ سے تسلی کرائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کا کام میں نہ مانوں، اس اپوزیشن کو میں تو کیا کوئی بھی نہیں منا سکتا، اپوزیشن کو ایک دوسرے کو بھی نہیں منا سکی۔ انہوں نے کہا کہ 2018میں فیصل آباد کو ٹیکسٹائل کا قبرستان بنا دیا گیا تھا،آج تو ایک ایک سال کے ایڈوانس آڈرز ہیں،ٹیکسٹائل کی رواں مالی سال کے آخر تک ایکسپورٹ 15تا16بلین ڈالر ہوجائے گی، حکومت نے ٹیکسٹائل کے شعبے کو40ارب کی سبسڈی دی۔