اسلام آباد ،30 اگست   (اے پی پی):سابق وزیرا عظم آزاد جموں اینڈا کشیمر سردار عتیق احمد خان نے کہا کہ مودی کی انتہا پسندی کی پالسیی نے کشمیر کی

آزادی کو ایک نیا راستہ دے دیا ہے اور کشمیری عوام  کو دبانے کا پروگرام  مکمل  طور پر فیل ہو چکا ہے ۔

ان خیالات  کا اظہار انہوں نے سرکاری خبر رساں ایجنسی اے پی پی ہیڈ کوارٹرز اسلام آباد میں یوم  یکجہتی  کشمیر کی تقریب کے موقع    پر اے پی  پی  سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے  کیا ۔ انہوں نے کہا سرینگرمحاصرے کے  نتیجے میں آج کشمیر کی آزادی کے لیے پوری پاکستانی قوم متحد ہوچکی ہے۔ آج زندگی کا ہر شعبہ جن میں طلباء ،علما اکرام ءسول سوسائٹی ،وکلا ء  تاجران سب کشمیر کی آزادی کے لیے سب  ایک  ہو چکے  ہیں۔ کشمیر کے پہاڑ ، موسم ، دریا ،کشمیری مزاج ،ماحول سب پاکستان کے  ساتھ جڑ چکے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ کشمیر  میں عید ، شب برات اور خوشی کے تمام  تہوار  پاکستان کے ساتھ منائے جاتے  ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آج سیاسی وابستگیوں سے بالاتر ہو کر سب کشمیر کے ساتھ ہیں ۔

سردار عتیق احمد خان  نے کہا کہ قائداعظم کے  ویژن کے مطابق تمام  اسٹیک ہولڈر ز  اکٹھے ہو چکے ہیں ،پاکستانی قوم خطرے کو روکنے کے لیے باہر آچکی ہے ۔50 سال بعد انڈیا    کی سخت طریقے سے  مذمت کی گئی ہے ۔ہم انسانی حقوق کی پامالی مسترد کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر میں بچے بھوک سے تڑپ  رہے ہیں،فالج،شوگر  اور گردوں کے مریض   بھی تڑپ رہے ہیں لیکن ان کو علاج کی  سہولت نہیں دی جا رہی ۔  کشمیر کے ہاتھ  آج انڈیا  کے مسلمان بھی اپنے تشخص  کو مجروح ہوتے دیکھ رہے ہیں لیکن  آج کا دن  بہت اہم ہے اور

انشا ء اللہ کشمیر  بنے گا پاکستان۔ہم پاکستان ، پاکستانی حکومت اور عوام کا شکریہ ادا کرتے ہیں ۔

وی این ایس،اسلام آباد