اسلام آباد، 11ستمبر ( اے پی پی): سری لنکاکرکٹ ٹیم کا دورہ پاکستان، کپتان سمیت سینئر کھلاڑیوں کی جانب سے پاکستان آنے سے انکار سمجھ سے بالا تر ہے۔ پریرا، ملنگا، اینجلو میتھیوز سمیت 10 کھلاڑیوں نے دورہ پاکستان سے معذرت کرلی۔کھلاڑیوں کی جانب سے پاکستان میں سیکیورٹی سے متعلق تحفظات کا اظہار کیا گیا ہے جبکہ شائقین کرکٹ کا کہنا ہے کہ سری لنکن کھلاڑی پاکستان آئیں، کرکٹ کھیلیں کیونکہ کرکٹ کے دیوانے انٹرنیشنل کرکٹ دیکھنے کو بے قرار ہیں۔شائقین کا کہنا ہے کہ گزشتہ دونوں ہونے والے بین الاقوامی مقابلے اس بات کا ثبوت  ہیں کہ پاکستان ہر قسم کے کھیلوں کے  لیے محفوظ ملک ہے۔

سری لنکا کا دورہ پاکستان 27 ستمبر سے 19 اکتوبر تک طے ہے جس میں دونوں ممالک کی ٹیموں کے درمیان  3 ون ڈے اور  3 ٹی ٹوینٹی میچ کھیلے جانے ہیں۔ 2009 میں سرلنکن کرکٹ ٹیم پر حملے کے بعد یہ سری لنکن ٹیم کا دوسرا دورہ ہوگا۔

اس سے قبل سرلنکن سیکیورٹی وفد نے اپنے دورہ میں اطمینان کا اظہار کیا اور تمام کھلاڑیوں کو سیکیورٹی سے متعلق تفصیل سے آگاہ بھی کیا۔کھلاڑیوں کی جانب سے انکار کے بعد سرلنکن کرکٹ بورڈ نے اس صورتحال حال کا فوراً نوٹس لیا اور دورے سے انکار کرنے والے کھلاڑیوں کو کسی بھی لیگ کے لئے این او سی جاری نا کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

کیریبیئن پریمیئر لیگ بھی انہی دنوں میں ہو رہی  ہے ، جس میں سری لنکن کھلاڑی بھی شرکت کر رہے ہیں۔دورہ سے انکا رکرنے والے کھلاڑیوں میں کپتان تھیسارا پریرا بھی شامل   ہیں جو کہ 2017 میں دورے کا حصہ رہ چکے ہیں۔

اے پی پی/احسن عباس /قرۃالعین