اسلام  آباد،31 جنوری (اے پی پی ):امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مشرق وسطیٰ میں قیامِ امن کے لیے اپنا منصوبہ پیش کر دیا ہے جس میں یروشلم کو اسرائیل کا غیر منقسم دارالحکومت رکھنے کا عہد شامل ہے،ان کے پیش کردہ اس منصوبے کا طویل عرصے سے انتظار کیا جا رہا تھا۔

مشرق وسطیٰ کے لیے صدر ٹرمپ کے امن منصوبے میں فلسطینی ریاست کے قیام کی بات کی گئی ہے مگر ساتھ ہی نئی یہودی بستیوں کو تسلیم کرنے کا اشارہ بھی دیا گیا ہے۔

صدر ٹرمپ کے پلان کے مطابق یروشلم، اسرائیل کا غیر مشروط اور غیر منقسم دارالحکومت ہوگا۔ صدر ڈونلڈ ٹرمپ  نے کہا کہ اسرائیلی اور فلسطینی دونوں ہی اس شہر کے دعوے دار ہیں اور یہاں بہت سارے مقدس مقامات ہیں۔ فلسطینیوں کا اصرار ہے کہ مشرقی یروشلم جس پر اسرائیل نے 1967 کی عرب اسرائیل جنگ میں قبضہ کیا تھا، یہی ان کی مستقبل کی ریاست کا دارالحکومت ہوگا۔

اس پلان  کے اعلان اور ملاقات میں تیسرہ فریق یعنی محمود عباس موجود نہیں تھے، نہ ہی ان کو اعتماد میں لیا گیا اورنہ ہی اس میں  یہودی مذہب کے علاوہ کسی اور  مذہب کو  اہمیت دی گئی ہے۔

وی این ایس،اسلام آباد

Download Video