اسلام آباد ، 31 جنوری (اے پی پی ): چین کے علاوہ دیگر ممالک میں کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیشِ نظر عالمی ادارہِ صحت ڈبلیو ایچ او نے اسے ایک عالمی ایمرجنسی قرار دے دیا ہے۔ڈبلیو ایچ او کے چیف ٹیڈروس ایدھینوم کا کہنا تھا  کہ اس اعلان کی وجہ وہ نہیں جو چین میں ہو رہا ہے بلکہ دیگر ممالک میں ہونے والے واقعات ہیں۔انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ یہ وائرس ایسے ممالک میں پھیل سکتا ہے جہاں طبی نظام قدرے کمزور ہیں۔چین میں اب تک اس وائرس کی وجہ سے 170 لوگ ہلاک ہو چکے ہیں۔

ڈبلیو ایچ او کے مطابق چین کے باہر اس وائرس کے 98 کیسز سامنے آ چکے ہیں تاہم ابھی تک کوئی ہلاکت رپورٹ نہیں کی گئی ہے۔ان میں سے زیادہ تر کیسز ایسے افراد کے ہیں جو کہ چین کے شہر ووہان سے سفر کر کے آئے ہیں جہاں سے یہ وائرس پھیلنا شروع ہوا تھا۔

ڈاکٹر ٹیڈروس ایدھینوم نے جنیوا میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ اس وائرس کی وبا ایک بے مثال انداز میں پھیلی اور اس کا پھر ایک بے مثال انداز میں مقابلہ کیا جا رہا ہے۔انھوں نے چینی حکام کی اس کی روک تھام کے لیے کی گئی کوششوں کو بہترین قرار دیا۔

اس سے قبل پاکستان کے وزیر مملکت برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا تھا کہ چین کو عالمی ادارہ صحت کی جانب سے دی جانے والی تجاویز کے تناظر میں پاکستان نے ووہان سے اپنے شہریوں کو نہ نکالنے کا فیصلہ کیا ہے۔

وی این ایس ، اسلام آباد

Download Video