کوئٹہ، 26مارچ ( اے پی پی):گورنربلوچستان جسٹس(ر) امان اللہ خان یاسین زئی نے مخیرحضرات سے اپیل کی ہے کہ وہ مشکل کی اس گھڑی میں ضرورت مند لوگوں کی مدد کیلئے آگئے آئیں ۔علماءکرام کورونا وائرس سے بچاو کیلئے احتیاطی تدابیر اورآگاہی کیلئے اپنا کرداراداکریں۔

“اے پی پی”سے گفتگوکرتے ہوئے گورنربلوچستان نے کہاکہ حکومت کوروناوائرس کی روک تھام اورمتاثرہ افراد کی بحالی کیلئے تمام وسائل بروئے کار لارہی ہے ۔صدرپاکستان ڈاکٹرعارف علوی اوروزیرا عظم عمران خان نے واضح کیا ہے کہ مکمل لاک ڈاون اورکرفیونہیں لگایاجائے گا تاہم انہوں نے بلوچستان سمیت ملک تمام عوام سے گھروں تک محدود ہونے کی اپیل کی ہے  ۔

انہوں نے کہاکہ لاک ڈاون سے ڈیلی ویجز پرکام کرنے والے اورچھابڑی لگانے والے زیادہ متاثر ہوں گے، حکومت ان کے مدد کیلئے بھی اقدامات اٹھارہی ہے ۔ اس کے ساتھ ساتھ صاحب حیثیت افراد مشکل کی اس گھڑی اپنے محلے اورعلاقے گلیوں میں غریب اورنادار افراد کیلئے مدد کیلئے آگے آئیں ۔انہوں نے کہاکہ رمضان المبارک کامہینہ قریب ہے صاحب حیثیت افراد قبل از رمضان المبارک اپنی زکوة نادار لوگوں میں تقسیم کریں تاکہ ان کی زندگی کا پہیہ چلتا رہے ۔

گورنربلوچستان نے کہاکہ ایسے پیشہ ورلوگوں کی حوصلہ شکنی کی ضرورت ہے جو مشکل وقت میں نادار لوگوں کے نام پر صدقات خیرات بٹورتے ہیں ۔گورنر بلوچستان نے علماءکرام سے اپیل کی ہے کہ وہ لوگوں میں شعوروآگاہی پیداکرنے کیلئے اپنے اپنے پیلٹ فارم سے کردارداکریں ۔انہوں نے کہاکہ حکومت اپنی سطح پر علاج ومعالجے سے متعلق تمام وسائل بروئے کارلارہی ہے تاہم عالمی طورپر اس بات کو تسلیم کیاجارہے کہ کوروناوائرس سماجی فاصلوں سے ہی ممکن ہے عوام سے اپیل ہے کہ وہ ان خصوصی حالت میں مل جول سے اجتناب برتیں اوراحتیاطی تدابیر پر عمل پیراہوتے ہوئے گھروں تک محدود رہے۔

اے پی پی / محمد بلال /حامد