چیف نیوٹریشن منسٹری آف پلاننگ کمیشن اسلم شاہین نے بتایا ہے کہ ماں کا دودھ نہ پینے والے بچوں میں  سٹنٹڈ گروتھ جیسے مسائل کا سامنا ہوتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ بچے کی ذہنی اور جسمانی نشوونما کے لیے پہلے دو سال انتہائی اہم ہوتے ہیں جن میں ماں کا دودھ ضرور پلایا جانا چاہیے۔ وہ اے پی پی سے بریسٹ فیڈنگ ویک کے حوالے سے خصوصی گفتگو کر رہے تھے۔۔۔ مزید جانیں اس انٹرویو میں۔

سورس: وی این ایس، اسلام آباد