اسلام آباد، 30اگست (اے پی پی): مقبوضہ جموں اور کشمیر کے عوام سے اظہار یکجہتی کے لیے وزیراعظم عمران خان کی اپیل پر آج آر بلاک میں

‘کشمیر آور’ منایا  گیا جس میں وزیر داخلہ ر بریگیڈئیر اعجاز شاہ اور وزیر خزانہ حفیظ شیخ مہمان خصوصی تھے جبکہ ‘کشمیر آور’ میں وزارت داخلہ ، وزارت خزانہ اور امور کشمیر گلگت بلتستان کے ملازمین اور خواتین و بچوں کی بہت بڑی تعداد نے شرکت کی۔ شرکاء نے کشمیر بنے گا پاکستان اور ہم لے کے رہیں گے آزادی کے نعرے لگائے اور پاکستان اور کشمیر کے جھنڈے بھی  لہرائے۔ کشمیر آور دن 12 سے ساڑھے 12 بجے تک منایا گیا۔اس کے ساتھ ساتھ پاکستان اور آزاد جموں کشمیر کا قومی ترانہ بھی بجایا گیا، جس کے ساتھ ہی تمام افراد اپنے مقامات پر کھڑے ہوگئے۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خزانہ حفیظ شیخ نے کہا کہ  ہم آج یہاں جمع ہوئے  ہیں تاکہ پوری دنیا دیکھ سکے ہم کشمیری بھائیوں کے ساتھ ہیں،ہم ہر کشمیری مرد عورت اور بچے کے ساتھ کھڑے ہیں۔جو شمع بہتر سال میں نہیں بجھائی جا سکی وہ بہتر دن میں بھی نہیں بھجائی جا سکتی۔

انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی دنیا کو مقبوضہ کشمیر میں جاری مظالم کا نوٹس لینا چاہئے۔ایک دن آئے گا جب کشمیریوں کو ان کا حق ملے گا ور ایک دن پاکستان کا حصہ بنے گا،ہمیں کوئی بھی قربانی دینی پڑے گی ہم اس سے دریغ نہیں کریں گے ۔انہوں نے کہا کہ کشمیری دنیا کے کسی بھی حصے میں اور خطے میں ہوں ان  کی آواز ایک ہے کہ ہم آزادی لے کر رہیں ۔ ایک دن آئے گا جب کشمیر پاکستان کا ساتھ ہوگا،جو جہاں ہیں وہیں اپنی آواز کشمیری بھائیوں کے ساتھ ہیں.

وزیر داخلہ اعجازاحمدشاہ کا  یکجہتی  کشمیر احتجاج کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کہا آج پوری قوم اس بات کا پیغام دے رہی ہے کہ ہم سب کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم کسی صورت بھی بھارت کے ناپاک عزائم کامیاب نہیں ہونے دینگے۔وہ وقت دور نہیں جب کشمیری عوام آزاد فضا میں سانس لے سکیں گے،کشمیر کےمسئلے کے حل تک ہر ممکن کوشش جاری رکھیں گے،اس موقع پر فضا پرجوش نعروں سے گونج اٹھی-

سورس:وی این ایس،اسلام آباد