اسلام آباد،13 نومبر   (اے پی پی ):   ترجمان دفتر خارجہ  ڈاکٹر  محمد  فیصل  نے کہا ہے کہ    کرتارپور رہداری کا  کھولنا اس بات کا مظہر  ہے کہ پاکستان اقلیتوں  کیساتھ  مثبت رویہ رکھتا  ہے ہندوستان کو بھی اس کے جواب  میں کچھ مثبت رویہ اختیار کرنا چاہئے،پاکستان کو مقبوضہ کشمیر سے متعلق صرف وہی فیصلہ قبول ہوگا جو کشمیری عوام کی امنگوں کے عین مطابق ہو ۔

  اے پی پی سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے   ڈاکٹر  فیصل کا کہنا تھا     مقبوضہ کشمیر میں جو کچھ ہو رہا  وہ  بھی دنیا  دیکھ رہی اس  کے باوجود بھی ہماری امن کی کوششیں  جاری ہیں   اور رہیں گی۔ پاکستان نے بھارتی سکھوں کے لئے کرتاپور راہداری کھولی  لیکن   اسی دن   بابری مسجد   سے متعلق    فیصلہ  مودی حکومت   کے مذموم  مقاصد کا عکاس ہے  اور   پاکستان   بابری مسجد  کے فیصلے  کی مذمت کر چکا ہے  ۔

 ڈاکٹر فیصل نے کہا    کہ    پاکستان کو صرف اور صرف  مقبوضہ کشمیر کا وہی فیصلہ قابل قبول ہے جو  کشمیریوں  کے امنگوں  کے عین مطابق ہو اور پاکستان صرف اور صرف  اسی فیصلہ کو  لے کر آگے  چلے گا۔

 وی این ایس، اسلام آباد

 

Download Video