اسلام آباد، 02 دسمبر(اے پی پی ): معیشت کے استحکام اور ترقی  کی حکومتی کاوشوں کے مثبت اثرات ملکی معیشت پر   ظاہر ہونا شروع ہو گئے  ہیں اور صرف قومی سطح  پر ہی نہیں بلکہ  بین الاقوامی سطح پر بھی   پاکستانی معیشت کی بہتری اور استحکام  کا اعتراف کیا جا رہا ہے  ۔

دنیا کے معتبر کریڈٹ ریٹنگ ادارے “موڈیز انوسٹرز سروس” نے پاکستان کا معاشی آؤٹ لک ‘منفی’ سے بدل کر ‘مستحکم’ کر دیا  ہے  اور  پاکستان کی ساورن  کریڈٹ ریٹنگ کی ‘بی تھری’ کے طور پر نئے سرے سے تصدیق کی ہے ۔

وزارت خزانہ کے مطابق  معاشی آؤٹ لک کی ‘منفی’ سے ‘مستحکم’ درجے میں ترقی ملکی معیشت کو سنبھالنے اور مستحکم بنانے کی حکومتی کوششوں پر اعتماد کا اظہار ہے اور حکومت  مستقبل میں بھی  تیز تر، پائیدار اور یکساں معاشی ترقی کو مضبوط بنیادوں پر استوار کرنے کے لیے معاشی اصلاحات کےایجنڈا پر گامزن رہے گی۔

وزیراعظم کے مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے سماجی رابطے کی ویب سائیٹ پر ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ پاکستان کی درجہ بندی منفی سے بی تھری مستحکم کیا جانا ملکی معیشت کو مستحکم بنانے اور طویل المدتی نمو کے لئے ایک پختہ بنیاد رکھنے میں حکومت کی کامیابی کی تصدیق ہے۔

 

 

وی  این ایس، اسلام آباد

Download Video