اسلام آباد ،2 ستمبر (اے  پی پی) وفاقی وزیر برائے توانائی نے دو ہزار تیس تک متبادل ذرائع سے 18 ہزار میگاواٹ بجلی پیدا کرنے کی خوش خبری سنادی ،عمر ایوب کہتے ہیں تیل و گیس کی تلاش کے حوالے سے نئی پالیسی ایک ماہ میں طے کرلی جائے گی ۔

اسلام آباد ميں آئل اینڈ گیس کانفرنس سے خطاب ميں عمرایوب کاکہنا تھا کہ انرجی مکس کومقامی ذرائع توانائی سے تبدیل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ مستقبل میں توانائی کے شعبے میں ایک دوارب ڈالرنہیں اربوں ڈالرزکی سرمایہ کاری آئے گی۔

وفاقی وزیر نے مزيد کہا کہ قابل تجدید ذرائع توانائی کو تيس فیصد کرنا چاہتے ہیں  جس کے لئے ریسرچ  پر توجہ دینا ہوگی

اس موقع پر ماہرین کا کہنا تھا کہ  پاکستان میں توانائی کے وسیع ذخائر موجود ہیں  تاہم ابھی تک 70 فیصد ذخائر نکالے ہی نہیں جاسکے۔

تیل و گیس کے علاوہ توانائی کے دیگر ذرائع بھی  وقت کی ضرورت ہیں تاہم ماہرین کے مطابق کم وسائل کی وجہ سے ابھی پاکستان میں متبادل توانائی کے کمرشل استعمال میں بہت  وقت  باقی ہے ۔

کانفرنس میں توانائی کے شعبے میں کام کرنے والی مختلف کمپنیوں،ایشین ڈویلمپنٹ بنک  کے علاوہ مختلف سٹیک ہولڈز نے بھی شرکت کی  جبکہ  اس موقع پر  پاکستان انرجی آوٹ لوک 2019 بھی لانچ کی گئی۔

وی این ایس اسلام آباد