اسلام آباد، 07اپریل  (اے پی پی): پلانٹ پروٹیکشن ڈپارٹمنٹ کے  ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر فلک ناز  نے کہا  ہے کہ ٹڈی دل کے مسئلے پر حکومت اور دیگر سرکاری اداروں کے ساتھ ساتھ کسانوں اور عام لوگوں کو بھی اپنا کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے تا کہ زیادہ مؤثر انداز میں اس مسئلے کو حل کیا جا سکے۔

ٹڈی دل کے مسئلے پر اے پی پی ویب ٹی وی پر اپنے ایک  خصوصی انٹرویو میں  انہوں نے  کہا کہ مکئی اور کپاس ہماری اہم نقدآور فصلیں ہیں ان سے نہ صرف ہماری غذائی ضروریات پوری ہوتی ہیں بلکہ درآمدات سے زرمبادلہ بھی حاصل  ہوتا  ہے ،اس لیے ان پر ٹڈی دل کا حملہ ہماری معیشت پر  مہنگے اثرات مرتب کر تا ہے۔

ڈائریکٹر جنرل پلانٹ پروٹیکشن ڈپارٹمنٹ کا کہنا تھا  کہ ایران کے علاوہ ہمارے قریبی ممالک مسقط اور یمن وغیرہ میں بھی ٹڈی دل کی  افزائش ہورہی ہے کیونکہ ان علاقوں کا موسم ٹڈی دل کی افزائش کے لئے ان دنوں بہت سازگار ہے اور  آنے والے دنوں میں اس کا رخ ہمارے بلوچستان کے ساحلی علاقوں اور تھرپارکر کی طرف ہوگا، اس  کے نقصان سے بچنے کےلئے بروقت اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہاکہ ٹڈی دل سے تحفظ ہمارے لئے ایک بڑا چیلنج ہے، چونکہ یہ کم آبادی اور صحرائی علاقوں میں تیزی سے اپنی تعداد میں اضافہ کرتاہے اس لئے ایسے علاقوں میں رہنے والے افراد کی ذمہ داری ہے کہ جب اس کی آمد کا علم ہو تو  فوری طور متعلقہ سرکاری حکام کو اس کی اطلاع دیں تاکہ فوری طور پر اس کے تدارک اور خاتمے کیلئے اقدامات کئے جاسکیں۔

اے پی پی/ سعیدہ/حامد