میرپور ، 25 ستمبر (اے پی پی):وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کی ہدایت پر پاک فوج، این ڈی ایم اے سمیت سانحات سے نمٹنے والے تمام ادارے میر پور میں ریسکیو اور ریلیف آپریشن میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہے ہیں،آج ہم سب کا امتحان ہے، جب بھی قوم پر مشکل وقت یا قدرتی آفت آئی تو پوری قوم اکٹھی ہو جاتی ہے، ایک مرتبہ پھر 22 کروڑ عوام آزاد کشمیرزلزلے میں اکتوبر 2005 ء والا جذبہ دہرا رہے ہیں، حکومت پاکستان زلزلہ متاثرین کی بحالی، مالی نقصان کے ازالے کے لئے اپنا بھرپور کردار ادا کرے گی، وزیر اعظم کو نقصانات کے حوالے سے لمحہ بہ لمحہ رپورٹ بھجوائی جا رہی ہے۔

 وہ بدھ کو ڈویژنل ہیڈکوآرٹر ٹیچنگ ہسپتال میر پور میں زخمیوں کی عیادت کے بعد صحافیوں سے گفتگو کررہی تھیں۔ پاکستان بیت المال کے چیئرمین عون عباس پپی، میڈیکل سپرنٹنڈنٹ، اسسٹنٹ کمشنر میر پور بھی اس موقع پر موجود تھے۔ ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ اس افسوسناک المیہ پر وزیر اعظم عمران خان کی خصوصی ہدایات پر میر پور کا دورہ کر رہی ہوں ۔ میر پور کے زلزلہ متاثرین کے ساتھ وزیر اعظم عمران خان اور 22 کروڑ عوام کی جانب سے افسوس کا اظہار کرتی ہوں۔ انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر کی عوام پاکستان کی شناخت اور قیمتی اثاثہ ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان نے زلزلے کی اطلاع ملتے ہی پاک فوج ، این ڈی ایم اے اور ریسکیو اداروں کو فوری طورپر میر پور کے متاثرہ علاقوں میں پہنچ کر پہلے مرحلے میں ریسکیو ، دوسرے مرحلے میں ریلیف اور تیسرے مرحلے میں بحالی کے لئے اقدامات اٹھانے کی ہدایات دی ہیں ۔تمام ادارے بروقت میر پور کے متاثرہ علاقوں میں پہنچ کر اپنی اپنی ذمہ داریاں ادا کرنی شروع کر دی ہیں۔ این ڈی ایم اے کے ساتھ ساتھ پاکستان بیت المال کی ٹیم بھی متاثرہ علاقوں میں موجود ہے۔ امداد سرگرمیوں میں ہماری اولین ترجیح ہے کہ کوئی جگہ ایسی نہ رہے جہاں پر امدادی سرگرمیاں نہ ہوں ۔ایک حکمت عملی اور مربوط رابطوں کے ذریعے آگے بڑھ رہے ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ گزشتہ روز جب یہ زلزلہ آیا تو اس وقت میں سوشل میڈیا تربیتی ورکشاپ سے خطاب کر رہی تھی۔ شرکاء کا حوصلہ بڑھانے کے لئے میں جو بات کی اسے ایک مخصوص جماعت کے میڈیا سیل نے توڑ مروڑ کر زلزلہ سے منسوب کیا جس کی میں شدید مذمت کرتی ہوں۔ مخصوص سیاسی جماعت کے میڈیا سیل کی جانب سے سوشل میڈیاپر ٹاپ ٹرینڈ بنا کر زلزلہ متاثرین کے زخموں پر نمک پاشی کی گئی جو افسوسناک امر ہے۔ پوری قوم کے اکٹھے ہونے کا وقت ہے۔ ایک مشکل صورتحال میں سیاست سے بالا تر ہو کر کشمیری بہن بھائیوں کے ساتھ کھڑا ہونے کا وقت ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں وزیر اعظم عمران خان کشمیریوں کے مؤقف کی ترجمانی کے لئے دنیا بھر کی قیادت سے بات کر رہے ہیں اور دنیا کو بتا رہے ہیں کہ مقبوضہ کشمیر میں 51 دنوں سے بھارتی ریاستی دہشت گردی عروج پر ہے۔ ان حالات کا تقاضہ یہ ہے کہ میڈیا سمیت تمام سیاسی جماعتیں، سول سوسائٹی ذمہ دارانہ کردار ادا کرے۔ بیان بازی اور بہتان تراشی یا کیچڑ اچھالنے کی بجائے سب کو آسانیوں کے لئے کردار ادا کرنا ہو گا۔

سورس: وی این ایس، اسلام آباد

د