چترال، 02جولائی  (اے پی پی ):چترال کے تاریخی قصبے دروش میں اوسیک کے مقام پر 70 سال بعد دریائے چترال پر  پختہ   پل (آر سی سی  پل ) کی  تعمیر شروع  ہو گئی ہے ،موجودہ حکومت کی جانب سے  اس پل کی   تعمیر کیلئے  دس کروڑ روپے کا فنڈ جاری  کیا گیا  ہے ۔

دروش سے تعلق رکھنے والے پاکستان تحریک انصاف کے رہنماءحاجی گل نواز نے بتایا کہ وزیر اعظم  عمران خان  نے   میری  درخواست پر  وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا سے رابطہ کرکے اس پل کیلئے دس کروڑ روپے منظور کروائے جبکہ اس کے علاوہ جنجیریت کوہ روڈ کیلئے سولہ کروڑ روپے، ارندو روڈ کیلئے دو ارب روپے ، مڈگلشٹ کیلئے تین ارب روپے، سویر روڈ کیلئے دو کروڑ روپے اور نگر ارسون کیلئے بھی سڑک اور پل منظور ہوئے ہیں ۔  انہوں نے وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا خواہ کا شکریہ ادا کیا جو چترال کے ساتھ حصوصی محبت رکھتے ہیں اور انہوں نے تیس کروڑ روپے دیگر منصوبوں کیلئے  بھی منظور کئے  اور چترال میں سپورٹس کمپلیکس  کیلئے بیس کروڑ روپے بھی منظور کئے ہیں۔

علاقے کے لوگوں نے محکمہ کمیونیکیشن اینڈ ورکس کے ذمہ داران سے مطالبہ کیا کہ وہ اس پُل کی تعمیر کے  کام  کی سختی سے نگرانی کرے۔

واضح   رہے کہ دریائے چترال  پر  موجود  اوسیک پُل ، لکڑیوں کا  جھولا پُل ہے  جو  1982 میں بنایا گیا تھا ،اس سے پہلے برطانیہ دور حکومت میں یہاں پیدل چلنے   کیلئے  ایک  چھوٹا سا پل تھا،اس پل میں کئی حادثات بھی پیش آچکے ہیں۔

وی  این ایس،  چترال