چترال،16ستمبر(اے پی پی):دور حاضر میں پولو جو کہ ایک  راویتی  کھیل  ہے  کا شمار  دنیا کے  مقبول ترین   کھیلوں   میں کیا جاتا  ہے ،  پولو عموماً گھوڑا پر سوار ہو  کر  کھیلا  جاتا  ہے  مگر  پاکستان  کے خوبصورت ترین علاقے  گلگت  بلتستان  میں سطح سمندر سے تیرہ ہزار فٹ کے بلندی پر واقع وادی بروغل میں پولو  ایک جنگلی  بیل “یاک” پر سوار  ہو کر  بھی کھیلاجاتا ہے۔

یاک پولو وادی بروغل کا خاص کھیل ہے جس میں ہر ٹیم میں چھ چھ کھلاڑی ہوتے ہیں۔اس کھیل میں یاک کے ناک میں سوراخ کرکے اس میں نکیل ڈالا جاتا ہے جس میں رسی ڈال کر اسے قابو کیا جاتا ہے۔ یاک پولو اور گھوڑا پولومیں  فرق صرف اتنا ہے کہ گھوڑا تیز دوڑتا ہے مگر یاک تیز نہیں دوڑ سکتا۔بال  مرکز میں پھینکا جاتا ہے ، اس کے بعد ہر کھلاڑی کوشش کرتا ہے کہ اسے ہاکی نما لکڑی سے مار کر آگے بڑھائے اور جہاں دو ستون کھڑے کئے جاتے ہیں اس کے درمیا ن میں سے گزار کر گول کیا جاتا ہے۔

گزشتہ  کئی سالوں  کی طرح امسال   بھی وادی بروغل میں یاک  پولو  کا انعقاد کیا گیا  جسے دیکھنےکے  لیے  مقامی افراد کیساتھ کیساتھ  غیر  ملکی  سیاخوں  کی ایک بڑی تعداد موجود تھی۔

کھیل کے اختتام  پر ڈپٹی کمشنر شاہس عود اور دیگر مہمانوں نے کھلاڑیوں میں انعامات تقسیم کئے ۔

اے پی پی/گل احمد فاروق/ نصیب الہیٰ