چترال ،04 مئی (اے پی پی ):ویسے تو پورا چترال پھولوں کا شہر سمجھا جاتا ہے مگر بعض علاقے ایسے بھی ہیں جہاں قدرت نے اپنے بیش بہا حسن کے خزانے لٹائے، وادی ایون اس قسم کے پھولوں کے باغات کیلئے بہت مشہور ہے۔

اس باغ کی خاص بات یہ ہے کہ یہاں ایک ہی پودے میں گلاب کے محتلف انواع و اقسام کے قلم لگائے گئے ہیں اور ایک ہی پودے میں یہ رنگ برنگے گلاب نہایت خوبصورت لگتے ہیں۔  یہاں پودے زمین کی بجائے  دیوار میں لگائے گئے ہیں۔فرصت کے لمحات میں یہاں آکر ان پھولوں کے ساتھ  وقت بھی اچھاگزرتا ہے اور روحانی سکون بھی ملتا ہے۔

وادی  میں موجود نوجوان  کا کہنا تھا کہ کرونا وائرس کی وجہ سے دنیا بھر کے لوگ گھروں میں خود ساحتہ قرنطینہ میں قید تنہائی گزار رہے ہیں اس سے بہتر یہ ہے کہ اپنے گھروں میں پھول لگائے ان کے ساتھ پیار کرے اور بدلے میں یہ پھول بھی ہم سے پیار کرتے ہیں ،ہمیں خوشیاں دیتے ہیں اور ہمیں ہشاش بشاش اور تازہ دم رکھتے ہیں۔ اگر علاقے کا ہر فرد اپنے گھروں میں پھولوں کے باغ لگائے تو یہ پورا  خطہ گل گلزار ہوجائے گا اور  یہ زمین پر جنت کا ٹکڑا نظر آنے لگے گا۔

 وی این ایس ، چترال