چترال،30اگست(اے پی پی ):چلغوزہ ایک ذائقہ دار خشک میوہ کے ساتھ ساتھ آمدنی کا بھی بڑا ذریعہ ہے ۔ مگر بعض نا عاقبت اندیش لوگ اسے وقت سے پہلے کچا  اتارکر ضائع کرتے ہیں جس سے ایک طرف یہ میوہ  خراب ہوتا ہے تو دوسری طرف جنگلات بھی تباہ ہوتے ہیں۔

چلغوزے کی تحفظ کیلئے چلغوزہ فارسٹ کنزرویشن کے نام پر ایک منصوبے کا آغاز کردیا گیا ہے جس میں مقامی لوگوں کو  چلغوزہ  درخت سے اتارنے کے لئے مفت سامان  دینے  کے ساتھ ساتھ تربیت بھی دی جائے گی کہ چلغوزہ کو کب اور کیسے اتارا جائے تاکہ اس کی نسل کشی بھی نہ ہو اور پھل بھی ضائع نہ ہو۔

مزید تفصیل کیلئے دیکھتے ہیں  چترال سے گل حمادفاروقی کی یہ رپورٹ

سورس: وی این ایس،چترال