اسلام آباد،25 فروری (اے پی پی ): وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے تخفیف غربت و سماجی تحفظ اور  چئیر پرسن   احساس  پروگرام   ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے آج  قائد اعظم   یونیورسٹی اسلام آباد کا دورہ کیا  ، جہاں  انہوں نے  احساس انڈر گریجویٹ سکالر شپ پراجیکٹ   کے لیے منتخب کیے  گئے  طلبا  سے ملاقات  کی ۔

اس موقع پر قائد اعظم   یونیورسٹی اسلام آباد کے  وائس   چانسلر    بھی موجود تھے  اور  ملاقات  میں احساس انڈر گریجویٹ سکالر شپ پراجیکٹ   کی افادیت اور  مزید بہتری   سے متعلق  تجاویز کے حوالے سے بات چیت  کی گئی ۔

اس  پراجیکٹ کے تحت 50 ہزار طلباءو طالبات کو تعلیمی وظائف دیئے جائیں گے جس  پر  تقریبا  5  ارب روپے لاگت آئے گی، پروگرام کے تحت 50 فیصد وظائف طالبات کے لئے مختص کئے گئے ہیں۔

احساس انڈر گریجویٹ سکالر شپ پراجیکٹ    کی  50 ہزار سکالر شپس کے لئے ایک لاکھ 30 ہزار سے زائد درخواستیں موصول ہوئی ہیں جن میں  سے 49 ہزار سے زائد درخواستیں  خواتین  کی تھی۔

 احساس پروگرام حکومت اور وزیراعظم کی پالیسی کا حصہ ہے جس کے تحت تعلیم، صحت، کاروبار، سماجی تحفظ اور دیگر شعبوں میں 134 ذیلی منصوبے متعارف کرائے گئے ہیں۔ ان پروگراموں کے لئے بااعتماد شراکت داروں کا تعاون حاصل کیا گیا ہے تاکہ ان کے موثر نتائج حاصل ہو سکیں۔

ضرورت پر مبنی سکالر شپس کی فراہمی  کا یہ   پروجیکٹ موجودہ حکومت کا یہ ایک بڑا انقلابی قدم  ہے کیونکہ اس  پروگرام کے  باعث  غریب گھرانوں کے  وہ ذہین اور ہونہار طلبا  تعلیم حاصل کرنے کے قابل ہو سکیں گے جو  مالی وسائل نہ ہونے کے باعث تعلیم ادھوری چھوڑ دیتے تھے

اس سکالر شپ پروگرام پر عمل درآمد کے سلسلے میں شفافیت اور میرٹ کو یقینی بنایا  گیا ہے   تا کہ    ہونہار اور مستحق طلباءو طالبات تعلیم حاصل کر کے اپنے خاندانوں کا سہارا بننے کے ساتھ ساتھ ملکی ترقی میں بھی بہتر کردار ادا کرنے کے قابل ہو سکیں گے۔

اے  پی پی /سعیدہ/نورین