اسلام آباد، 23ستمبر(اے پی پی):مقبوضہ کشمیر میں کرفیو کو آج پچاس  روز گزر جانے کے بعد بھی ذرائع  ابلاغ کو مکمل طور پر پابندی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، جبکہ سوشل میڈیا محدود وسائل  اور نہ جانےکتنی مشکلات کے بعد اپنا اہم کرداد ادا کر رہا ہے جس سے پوری دنیا کو کشمیر کے حالات سے آگاہی حاصل ہو رہی ہے۔

اس سلسلے میں بہت سے سوشل میڈیا گروپس اورپیجزبھی کشمیریوں پر  ہونے والے مظالم کو دنیا کے سامنے لانے کے لیے سوشل میڈیا مہم کو جاری  رکھے ہوئے ہیں

مقبوضہ کشمیر میں میڈیا اور موبائل فون سروس کے بلاک ہونے کے بعد سوشل میڈیا بھارتی فوجیوں کی طرف سے انسانی حقوق کی پامالیوں، مقبوضہ علاقے میں جاری کرفیو اور ذرائع مواصلات پر پابندی کی طرف عالمی برادری کی توجہ مبذول کروا رہا ہے ۔

وی این ایس اسلام آباد