اسلام آباد،10 اپریل   (اے پی پی): کورونا وائرس کے باعث دنیا کے مختلف ممالک کی طرح پاکستان میں جاری لاک ڈاٶن کی وجہ سے سڑکوں پرٹرانسپورٹ اور صنعتی سرگرمیاں محدود ہونے کے باعث فضائی آلودگی میں نمایاں کمی آئی ہے۔

ماحولیاتی ماہرین کے مطابق کئی دہائیوں کے بعد ماحول آلودگی سے پاک اور صحت افزا ہو رہا ہے اور ملک کے مختلف شہروں میں ہوا کے معیار کا انڈیکس بہتر ہوا ہے۔

سال 2016 میں پشاور دنیا کے سب سے آلودہ شہروں میں سے شامل تھا، 2019 میں کراچی کی ائیر کوالٹی انتہائی غیر صحتمند تھی تاہم اب کراچی کی ائیر کوالٹی معتدل سطح پر آگئی ہے۔لاہور کی ائیر کوالٹی میں بھی واضح بہتری نظر آرہی ہےجبکہ اسلام آباد کی ائیر کوالٹی کراچی اور لاہور سے بہت بہتر ہے۔

اے پی پی/cdrقرۃالعین