اسلام آباد،08 اپریل (اے پی پی ): وزیر اعظم عمران خان نے نوجوان رضاکاروں پر مشتمل کرونا ریلیف ٹائیگر فورس تشکیل دینے کا اعلان کیا ہے۔وزیر اعظم عمران خان  نے  قوم سے اپنے خطاب میں کہا کہ  پاکستان میں صورتحال اب بھی دنیا کے دوسرے ملکوں کے مقابلے میں بہتر ہے،البتہ مشکل صورتحال سے نمٹنے کے لیے رضاکار فورس تشکیل دی جارہی ہے، جس کے نوجوان لوگوں کو گھروں میں کھانا اور دیگر اشیائے ضروریہ پہنچائیں گے۔

کرونا ریلیف ٹائیگر فورس میں نوجوانوں کی شمولیت کا سلسلہ جاری ہے، اب تک آٹھ لاکھ نوجوان رجسٹریشن کا عمل مکمل کراچکے ہیں جبکہ ہزاروں کی تعداد خواتین بھی شامل ہے۔معاون خصوصی برائے نوجوانان عثمان ڈار نے وفاقی کابینہ کے اجلاس میں ٹائیگر فورس کی تازہ رپورٹ پیش کرتے ہوئے بتایا کہ ٹائیگر فورس کی لائیو اپ ڈیٹ کو کرونا کی  سرکاری ویب سائٹ پر پبلک کر دیا گیا ہے۔

معاون خصوصی نے بتایا کہ رجسٹرڈ نوجوانوں میں سب سے زیادہ تعداد طلبا، سوشل ورکرز کی ہے جبکہ انجینئرز، اساتذہ، وکلا، کارپوریٹ سیکٹر سے وابستہ افراد بھی فورس میں شامل ہیں۔عثمان ڈار نے بتایا کہ وکلا، صحافی، ریٹائرڈ آرمڈ فورسز سے وابستہ افراد نے بھی رجسٹریشن میں حصہ لیا ہے جبکہ ڈاکٹرز، سیاسی ورکرز، این جی اوز کے نوجوان بھی بڑی تعداد میں شامل ہوئے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ پنجاب سے رجسٹرڈ نوجوانوں کی تعداد 5 لاکھ سے زائد ہے، سندھ سے ایک لاکھ 11 ہزار، خیبرپختونخوا سے ایک لاکھ 2 ہزار نوجوان رجسٹرڈ ہوئے ہیں۔

وزیر اعظم کے معاون خصوصی نے کہا کہ دارالحکومت اسلام آباد سے 10 ہزار ، بلوچستان سے 9 ہزار اور آزاد کشمیر سے 8 ہزار نوجوان شامل ہوئے ہیں۔وزیر اعظم عمران خان نے ٹائیگر فورس کے آپریشنل معاملات پر اظہاراطمینان کرتے ہوئے فورس کو صوبائی سطح پر متحرک کرنے کی ہدایت کردی ہے ۔

طریقہ کار کے مطابق جو لوگ فورس کا حصہ بننے کیلئے تیار ہیں، وہ اپنے موبائل فون سے سٹیزن پورٹل ایپ ڈاؤن لوڈ کرکے اس پر ٹائیگر فورس کے لیے رجسٹر کرسکیں گے،وزیرِ اعظم کی کورونا ریلیف ٹائیگر فورس کا حصہ بننے کے خواہش مند افراد کیلئے سٹیزن پورٹل ایپ پر رجسٹریشن کی آخری تاریخ 10 اپریل رکھی گئی ہے۔