اسلام آباد، 30    اگست (اے پی پی ): وزیراعظم عمران خان کی اپیل پر پوری قوم   کشمیری بھائیوں کے ساتھ غیر متزلزل حمایت کے اظہار کے لئےیوم یکجہتی  کشمیر پورے  جوش و خروش کے ساتھ منا رہی ہے۔

اس سلسلے میں   تمام  سکول کالجز  کے  طالب علمو ں ، ادیبوں ، شاعروں،  دانشوروں  اور  کاروباری  برادری   کے افراد  بھی   بارہ سے ساڑھے بارہ بجے     تک نصف گھنٹہ کےلئے سب کام چھوڑ کر   اپنے مقام کار، دفاتر کی عمارتوں، گھروں، مارکیٹوں، شاپنگ مالز سے باہر آ کر قریبی سڑکوں اور گلیوںمیں جمع  ہوئے  اور    بھارتی مقبوضہ جموں و کشمیر کے مظلوم عوام کے ساتھ یکجہتی   کا اظہار کیا  ۔

آغاز پر ملک بھر میں سائرن بجائے  گئے اور پاکستان اورکشمیر کا ترانہ  بھی بجایا  گیا ۔  اس  دوران تمام ٹریفک رکی   رہی  اور  ٹرینیں ایک منٹ کے لئے کھڑی  رہیں  ۔   جمعہ کی نمازوں کے بعد مظلوم کشمیری عوام کے لئے خصوصی دعائیں  بھی کی گئیں ۔

اس کا مقصد کشمیریوں کو واضح پیغام دینا تھا   کہ پاکستانی قوم بھارت کے جبر و فسطائیت، مودی حکومت کے نسل کشی کے ایجنڈا اور خطہ کی حیثیت تبدیل کرنے کے غیر قانونی اقدام کے خلاف کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑی ہے۔

 یوم   یکجہتی   کے سلسلے میں ملک بھر  اور  وفاقی دارلحکومت میں   عوامی ریلیاں نکالی گئی  جن کے شرکاء نے پاکستان اور آزاد کشمیر کے پرچم  اور   کشمیری جارحیت کے خلاف    بینرز  تھامے ہوئے  تھے ۔

وی این ایس، اسلام آباد