چترال،08 دسمبر(اے پی پی ): سرحد رورل سپورٹ پروگرام نے پاک افغان سرحدی علاقے دومیل میں ایک پُل اور ارندو میں خواتین استانیوں کیلئے ہاسٹل  کا افتتاح کر دیا ، کمانڈنٹ چترال سکاﺅٹس بریگیڈیئر معین الدین اور مسز معین الدین نے منصوبوں کا افتتاح کیا۔

دومیل میں دریا پرجھولا پل چار ماہ کے نہایت قلیل مدت میں 72 لاکھ روپے کی لاگت سے تعمیر کیا  گیا۔ کمانڈنٹ چترال سکاﺅٹس بریگیڈئیر معین الدین نے پل کا افتتاح کرتے ہوئے کام کے معیار کو سراہا۔ اس پل کی تعمیر کیلئے فنڈز جرمن حکومت کے ڈونر ادارے پاکستان  افعانستان  تاجکستان علاقائی  انٹیگریشن پروگرام نے فراہم کیے تھے۔

اس موقع پر مقامی لوگوں نے سرحد رورل سپورٹ پروگرام اور  جرمن ڈونر ادارے  کا شکریہ ادا کیا جن کی کوششوں سے علاقے کے لوگوں کا یہ دیرینہ خواب شرمندہ تعبیر ہوا۔

افتتاح کے موقع پر ڈسٹرکٹ پروگرام منیجر  انجینئر خادم اللہ، میجر عبداللہ، ایس آر ایس پی کے  انجینئرز اور علاقے کے معززین بھی موجود تھے۔  انجینئر خادم اللہ نے بریگیڈئیر معین الدین کو اپنے ادارے کی جانب سے اس پسماندہ علاقے میں ہونے والے ترقیاتی منصوبوں کے بارے میں بریفنگ بھی دی۔

بعد ازاں بریگیڈیئر معین الدین اور مسز معین الدین نے ارندو میں گورنمنٹ گرلز مڈل سکول اور حال ہی میں اپ گریڈ ہونے والے گرلز ہائی سکول کیلئے زنانہ ہاسٹل کا بھی افتتاح کیا  اور زیر تعمیر ایک مڈل سکول اورا یک ہائی سکول برائے زنانہ کا معائنہ بھی کیا اور کام کی معیار پر تسلی کا اظہار کیا۔

سکول کی ہیڈ مسٹریس عمرانہ وزیر نے بتایا کہ اس سکول میں سب غیر مقامی استانیاں ہیں جن کو رہائش کا بہت مسئلہ تھا اب ایس آرایس پی نے ہمارے لئے ہاسٹل بنایا جس پر ہم ان کا اور  جرمن حکومت کے مشکور ہیں جنہوں نے ہمارا دیرینہ مسئلہ حل کیا۔

سورس: وی  این ایس،  چترال

Video Download