اسلام آباد، 05 اگست  (اے پی پی): اسلام آباد میں موجود قیام پاکستان سے پہلے کا تاریخی ورثہ تقسیم ہند کی جہاں یادیں تازہ کر رہا ہے وہی سیاحوں کی توجہ کا مرکز بھی ہے۔

گولڑہ شریف ریلوے اسٹیشن میں رکھے 1926 کے  ونٹیج سیلونز میں سے ایک سیلون آخری وائسرائے لارڈ مائونٹ بیٹن کے بیڑے کا حصہ تھا  جبکہ اس میں قائد اعظم محمد علی جناح اور محترمہ فاطمہ جناح کی بھی میزبانی کی گئی تھی۔

اس میں خوبصورت ٹیک کی لکڑی استعمال کی گئی  ہے۔ یہ سیلون پاکستان ریلوے کی عکاسی کرتا ہے؛  ایک شاہی سیلون جو ہندوستانی ریاست جودھ پور کے مہاراجہ نے اپنی دلہن بیٹی کو تحفہ میں دیا  تھا۔یہ 1888ء میں اجمیر شریف کیرج فیکٹری ورکشاپ میں تیار کیاگیا ۔

ان سیلونز کو سیاحوں کے لیے نمائش کے لیے رکھنے کا مقصد ریل کے 150 سال قدیم ورثے کو محفوظ اور برقرار رکھنا ہے۔

اے پی پی/سدرہ/نورین