اسلام آباد،31مئی  (اے پی پی): پنجاب کے وزیر آبپاشی محسن لغاری نے کہا کہ1991 کے  معاہدے   کے  مطابق  صوبے  اپنے  حصے  کا  پانی   اپنئ مرضی  سے   استعمال کر  سکتے  ہیں ،ارسا کے  اعدادوشمار کے   مطابق  اس  سال پنجاب کو 22فیصد ،سندھ کو 17فیصدپانی کی کمی ہوئی۔

وہ پیر کو پاک چائنہ فرینڈشپ سینٹر میں وزیر مملکت اطلاعات و نشریات فرخ حبیب اور سندھ میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔پنجاب کے وزیر آبپاشی محسن لغاری نے کہا کہ پنجاب نے اپنے استعمال کا پانی کم کر کے تونسہ بیرج کے  ذریعے مظفر گڑھ کو پانی  دیا، ایک دوسرے کے خلاف نفرت نہ پھیلائیں ،حقائق پر بات کریں۔ انہوں نے کہا کہ اس سیزن میں پنجاب کو 22فیصد ،سندھ کو 17فیصدپانی کی کمی ہوئی ۔

محسن لغاری نے کہا کہ کوہ سلیمان کے پہاڑوں پربارشوں کا پانی دریائوں میں سے دریائوں میں مزید دو فیصد پانی کا اضافہ ہوا ہے ،پنجاب کا نہری نظام 2600کا ہے یہاں سے ہوتا ہو  یہ پانی سندھ کے اندر جاتا ہے تو 39ملین لاسسز ہوجاتے ہیں ،غیر جانبدار مانیٹرلگائے جائیں تو اس بات کا باریک بینی سے جائزہ لے تا کہ پانی کا پتہ چل سکے۔