اسلام آباد،8جون  (اے پی پی):وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے کہا ہے کہ انتخابی اصلاحات پر اپوزیشن  کی  تجاویز کا  انتظار ہے ، ای وی ایم کا پراسیس ایک  ہفتہ میں   مکمل  ہو  جائے گا۔

کابینہ  اجلاس کے  بعد     میڈیا کو  بریفنگ دیتے ہوئےوفاقی وزیر  نے کہا کہ  گزشتہ روز ہماری الیکشن کمیشن کے ساتھ میٹنگ ہوئی، اس پر کابینہ کو بریفنگ دی گئی، ہمارے چار بنیادی معاملات تھے جس پر الیکشن کمیشن سے ملاقات کی گئی۔ گزشتہ برس اکتوبر سے الیکٹورل ریفارمز کا بل قومی اسمبلی میں ہے، ہم انتظار کر رہے ہیں کہ اپوزیشن اس پر اپنی رائے دے اور ان الیکٹورل ریفارمز کو قبول کرے یا مسترد کرے۔ ابھی تک ہم نے دیکھا ہے کہ مسلم لیگ (ن) نے عدالت میں پٹیشن دائر کی ہے اور کہا ہے کہ اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق نہیں ملنا چاہئے، یہ ایک افسوسناک امر ہے۔ اس پر ہماری پوزیشن واضح ہے، ہم اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینا چاہتے ہیں، اب ہم پیپلز پارٹی کے موقف کا انتظار کر رہے ہیں۔ ن لیگ نے پٹیشن فائل کر کے اوورسیز پاکستانیوں کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کر دیا ہے۔

وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ جہاں تک ای وی ایم کا تعلق ہے، اس پر ٹیکنالوجی پارٹ اور الیکشن کمیشن کی 36 کنڈیشنز مکمل ہو گئی ہیں، تین کمپنیاں مینوفیکچرزز اسٹیج پر ہیں اور وزارت سائنس و ٹیکنالوجی الیکشن کمیشن کو ڈیمو پیش کرے گی، رواں ہفتے ہی یہ پراسیس مکمل ہو جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ وزارت اطلاعات کی جانب سے ای وی ایم کی 500 مشینوں کا آرڈر دینے کی تجویز زیر غور ہے تاکہ پریس کلبوں اور بار کونسلز کے الیکشن ای وی ایم پر کروانے میں سہولت دی جا سکے۔