اسلام آباد،9جون  (اے پی پی):وفاقی وزیر نجکاری محمد میاں سومرو نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف ملک گیر پارٹی ہے، یہ نہ سوچا جائے کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کسی علاقہ یا صوبہ کو نظر انداز کرے گی ، گزشتہ طویل عرسہ سے جاری مسائل کے خاتمے کے اقدامات کئے جارہے ہیں ، سندھ میں بجلی ، پانی اور گیس سمیت دیگر سہولیات کے بنیادی ڈھانچہ کی بہتری اور ترقی کے اقدامات بھی کئے جارہے ہیں ۔

وفاقی وزیر نجکاری محمد میاں سومرو نے بدھ کو یہاں وفاقی وزیر ڈاکٹر فہمیدہ مرزا کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کا کام سیکیورٹی سے شروع ہوتا ہے تاکہ عوام کو تحفظ فراہم کیا جاسکے۔ انہوں نے کہاکہ میرا علاقہ جیکب آباد بلوچستان کے قریب ہے جہاں  پر امن و امان کی صورتحال خراب ہے، دیہاتوں اور گوٹھوں پر دن دیہاڑے حملے ہوتے ہیں ، بھتہ خوری بڑھ چکی ہے، علاقہ میں منشیات اور جوئے کے دھندے عروج پر ہیں۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ صوبہ سندھ میں غریب افراد کو بھاری شرح سود پر قرضے دیئے جاتے ہیں جو وہ ادا نہیں کرسکتے اور ان کا مال اسباب ضبط کر لیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ سندھ میں بنیادی ضرورتوں کی صورت حال تشویش ناک ہے اور عوام کے حالات  پر کوئی خدا خوفی نہیں ہے، جیکب  آباد کے ہسپتالوں میں عملہ اور سہولیات کا فقدان ہے، علاقہ کی آبادی دن بدن بڑھ رہی ہے لیکن صحت و تعلیم جیسی بنیادی سہولتوں کے مسائل بڑھتے جارہے ہیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ سندھ بھر اور بالخصوص جیکب آباد میں تجاوزات کی بھر مار ہے ،  عام آدمی کی تجاوزات تو گرا دی جاتی ہیں لیکن بااثر طبقات نے سرکاری املاک پر قبضے کر کے وہاں پر کمرشل ادارے  اور اپنی رہائش گاہیں تعمیر کرلی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بڑے لوگوں نے سرکاری املاک پر قبضے کر کے ان کے کاغذات بھی بنوا رکھے ہیں جن کو چیک کرنے کی ضرورت ہے۔

 محمد میاں سومرو نے کہاکہ منصوبہ بندی کمیشن نے بڑے توازن کے ساتھ دیگر صوبوں اور سندھ کا ترقیاتی بجٹ میں حصہ بڑھایا ہے۔انہوں نے کہاکہ گزشتہ چند سالوں کے دوران سندھ میں مختلف منصوبوں پر بھاری اخراجات کئے گئے جو کہیں نظر نہیں آتے ۔ انہوں نے کہاکہ سندھ کے حالات بہت خراب ہیں کیونکہ یہاں کی صوبائی حکومت کو عوام سے کوئی سرو کار ہی نہیں ، سندھ کے حالات اجاگر کرنے کے لئے میڈیا تعاون کرے تا کہ عوام کا معیار زندگی بہتر بنایا جاسکے۔

وفاقی وزیر نجکاری محمد میاں سومرو نے کہاکہ ترقیاتی بجٹ میں کم حصہ ملنے کا تاثر غلط ہے اور اگر کوئی ایسا سمجھتا ہے تو پلاننگ کمیشن اس پر نظر ثانی کیلئے تیار ہے۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ سندھ کے حالات طویل عرصہ سے خراب ہیں جن کو درست کرنے میں وقت لگے گا اور اس حوالہ سے وفاقی حکومت خاطر خواہ اقدامات کررہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان تحریک انصاف بجلی و گیس کے بنیادی ڈھانچہ کی بہتری پر خصوصی توجہ دے رہی ہے۔ پی ٹی آئی پورے ملک کی جماعت ہے اور یہ نہ سوچاجائے کہ پی ٹی آئی کسی علاقہ یا صوبے کو نظر انداز کرے گی۔

 انہوں نے مزید کہا کہ صوبہ میں زرعی رقبہ کو محفوظ بنانے اور فی ایکڑ پیداوار کے فروع کے اقدامات کی ضرورت ہے اس کے علاوہ صوبے کے چھوٹے ہسپتالوں اور تحصیل  کی سطح کے ہسپتالوں میں کتے اور سانپ کے کاٹے کی ویکسین کی دستیابی یقینی بنائی جائے تاکہ قیمتی انسانی جانوں کو بچایا جاسکے ۔